ایک شاعر

  • Work-from-home

shehr-e-tanhayi

Super Magic Jori
Administrator
Jul 20, 2015
39,614
11,639
1,113
ایک شاعر ڈاکو بن گیا اور ایک دن وہ بینک میں ڈاکا ڈالنے گیا اور بولا۔

:عرض کیا ہے

تقدیر میں جو ہے، وہ ملے گا
کوئی اپنی جگہ سے نہیں ہلے گا hands up

اپنے سب خواب میری آنکھوں میں ڈال دو
جو کچھ بھی ہے جلدی سے اس بیگ میں ڈال دو۔

بہت کوشش کرتا ہوں تیری یاد کو بھلانے کی
خبردار کوئی ہوشیاری نہ کرے پولیس کو بلانے کی

دل کا آنگن تیرے بن ویران پڑا ہے
جلدی کرو، باہر میرا ساتھی پریشان کھڑا ہے
 

shehr-e-tanhayi

Super Magic Jori
Administrator
Jul 20, 2015
39,614
11,639
1,113
Ab to 4:30 ho rhe
تھریڈ لگا تو دیا

 
Top