Fraib Khana Hai

ROHAAN

Senior Member
Aug 14, 2016
987
626
393
103483255_1641758695981219_8442370842698466071_n.jpg


فریب کھانا ہے

کسی خیال کے ہاتھوں فریب کھانا ہے
ترے جمال کے ہاتھوں فریب کھانا ہے

یہ آفتاب یہ مہتاب کچھ نہیں ہیں مجھے
حسین خال کے ہاتھوں فریب کھانا ہے

کہیں عروج کے آگے ٹھہر نہیں پانا
کہیں زوال کے ہاتھوں فریب کھانا ہے

بلندیوں سے ہے دانہ پرند نے دیکھا
کہ خاکی جال کے ہاتھوں فریب کھانا ہے

یہ تلخ و تند سے لہجوں سے ہار کیوں مانیں
شکر مقال کے ہاتھوں فریب کھانا ہے

خیال ماضی ہے کوئی نہ فکر مستقبل
ہمیں تو حال کے ہاتھوں فریب کھانا ہے

جواب جس کا ہے ازبر فصیح خوب مجھے
اسی سوال کے ہاتھوں فریب کھانا ہے
 
Top