Kuch To Hum Bhi Likhainge

ROHAAN

TM Star
Aug 14, 2016
1,213
683
413
25chandni.jpg


کچھ تو ہم بھی لکھیں گے

‏کچھ تو ہم بھی لکھیں گے، جب خیال آئے گا
ظلم ، جبر ، صبر کا جب سوال آئے گا

عقل ہے، شعور ہے پھر بھی ایسی بے فکر
تب کی تب ہی دیکھیں گے جب زوال آئے گا

یوں تو ہم ملائک ہیں ، بشر بھی کبھی ہونگے
دُسروں کے دُکھ پہ جب ملال آئے گا

‏لہو بھی رگوں میں اب جم سا گیا ہے کچھ
آنکھ سے بھی ٹپکے گا جب اُبال آئے گا

دیکھ مت فقیروں کو اس طرح حقارت سے
آسمان ہلا دیں گے جب جلال آئے گا

پگڑیاں تو آپ کی بھی ایک دن اُچھلیں گی
آپ کے گناہوں کا جب وبال آئے گا

شاعری ابھی ہمارے دل کی بھڑاس ہے
بالوں میں جب سفیدی ہو گی کمال آئے گا

‏جس کو مجھ سے کہنا ہے، جو کچھ بھی، ابھی کہ دو
خاک جب ہو جاؤں گا تب خیال آئے گا ؟

آج کل کے مسلم بھی فرقہ فرقہ پھرتے ہیں
ایک یہ تبھی ہوں گے جب دجال آئے گا
 
Top