Phans Jo Chubh Gayi Hai

ROHAAN

Senior Member
Aug 14, 2016
987
626
393
102389462_1638270656330023_3248726744596742144_n.jpg


پھانس جو چبھ گئی ہے

پھانس جو چبھ گئی ہے دل سے نہ نکالی جائیگی
یادِ جاناں سے کوئی شب اب نہ خالی جائیگی

اسکو دیکھا تو پھر دیکھتے ہی رہ گئے ہم صاحب
میری جاں تیری شبیہہ آنکھوں سے نہ نکالی جائیگی

دم نکل جائے گا کوئی دم میری ہے سانس باقی
تیری تصویر مگر اس دل سے نہ نکالی جائیگی

اسکی آمد نے دل میں جو بٹھا کر رکھی ہے فضا
اسکو چھونے کی یہ خواہش اب نہ نکالی جائیگی

کیسی آواز ہے یہ کہ بجتے ہیں کہیں دور گھنگرو
میرے کانوں سے اسکی آواز نہ نکالی جائیگی

روح پر چھائی ہے ازلوں سے اس کی وہ مہک
میری سانسوں سے بھی وہ خوشبو نہ نکالی جائیگی

دیکھ لی ہم نے بھی محبت محسوس کر لیا ہے غم
اب میری جاں ! قربت کی کوئی تدبیر نہ نکالی جائیگی
 
Top