Sun Sanson Ke Sultan Piya

ROHAAN

TM Star
Aug 14, 2016
1,452
796
613
Village-3.jpg


سُن سانسوں کے سلطان پیا

سُن سانسوں کے سلطان پیا
ترے ہاتھ میں میری جان پیا
میں تیرے بن ویران پیا
تو میرا کُل جہان پیا

مری ہستی، مان، سمان بھی تو
مرا زھد، ذکر، وجدان بھی تو
مرا، کعبہ، تھل، مکران بھی تو
میرے سپنوں کا سلطان بھی تو

کبھی تیر ہوئی، تلوار ہوئی
ترے ہجر میں آ بیمار ہوئی
کب میں تیری سردار ہوئی
میں ضبط کی چیخ پکار ہوئی

تجھے لوں لوں یار بلائے وے
مری جان وچھوڑا کھائے وے
ترا ہجر بڑا بے درد سجن
مری جان پہ بن بن آئے وے

مری ساری سکھیاں روٹھ گئیں
مری رو رو اکھیاں پھوٹ گئیں
تجھے ڈھونڈ تھکی نگری نگری
اب ساری آسیں ٹوٹ گئیں

کبھی میری عرضی مان پیا
میں چپ، گم صم، سنسان پیا
میں ازلوں سے نادان پیا
تو میرا کُل جہاں پیا

تو میرا سانول ڈھول پیا
کبھی بول تو مِٹھڑے بول پیا

ذرا دھیرے سے لب کھول پیا
یوں مول نہ کر مت تول پیا
مِری جندڑی کو مت رول پیا
بس کانوں میں رَس گھول پیا

تو میرا سانول ڈھول پیا
کبھی بول تو مِٹھڑے بول پیا

کبھی آنکھیں ساون بھادوں ہیں
کبھی سانسوں میں ویرانی ہے
’’میں لوٹ کہ پھر نہیں آؤں گا‘‘
تو ایسے تو مت بول پِیا

تو میرا سانول ڈھول پیا
کبھی بول تو مِٹھڑے بول پیا

ہمیں پیار کرو، بیمار کرو
جو جی میں آئے یار کرو
احسان یہ اب کی بار کرو
تبدیل کرو ماحول پیا

تو میرا سانول ڈھول پیا
کبھی بول تو مِٹھڑے بول پیا

کوئی سچ نہ تمہارا مانے گا
اپنا نہ کوئی پہچانے گا
کوئی تولے گا کوئی چھانے گا
تو جو جی چاہے بول پیا

تو میرا سانول ڈھول پیا
کبھی بول تو مِٹھڑے بول پیا

کیوں آس لگاتے رہتے ہو
کیوں پیاس جگاتے رہتے ہو
کبھی ہم بھی دیکھیں روپ تِرا
کبھی بند دروازے کھول پیا

تو میرا سانول ڈھول پیا
کبھی بول تو مِٹھڑے بول پیا

زینؔ اُس کی باتیں کرتے ہو
کیوں ٹھنڈی آہیں بھرتے ہو
نہ جیتے ہو نہ مرتے ہو
مت بند اشکوں کے کھول پیا

تو میرا سانول ڈھول پیا
کبھی بول تو مِٹھڑے بول پیا
 
  • Like
Reactions: minaahil
Top