Qudrati Nazaray

ROHAAN

Senior Member
Aug 14, 2016
987
626
393
56b63a3e2c452.jpg


قدرتی نظارے

قدرتی نظارے بکھرے ہیں چار سو
نشیب سے فراز تک روبرو دو بدو

خوش نوا پرندوں کے دلکشا ترانے
خالق کی نعمتوں کا شکرانہ کو بکو

دل لبھا رہی ہے آراستہ پھولوں کی
نزاکت و رعنائی رنگینی و خوشبو

صحرا و سمندر کی گہرائی و وسعت پہ
کرتے ہیں غور و فکر کچھ دیر من و تو

افلاک کی وسعت میں کیا راز نہاں ہیں
ڈالیں کمند ہم بھی کرتے ہیں جستجو

ہیں دلفریب کتنے قدرت کے نظارے
لگتا ہے ستارے بھی ہیں محو گفتگو

چشموں کا میٹھا پانی جھرنوں کی راگنی
کچھ یوں سرور بخش جیسے جام اور سبو

سبز میدانوں پہ شبنم کے موتیوں کی
مسحور کن بہاریں پھیلی ہے چار سو

جنگل کے باسیوں کے انداز نرالے
خونخوار درندے کہیں اور کہیں آہو

کائنات میں زمیں سے آسماں تک
بس ایک صدا گونجے اللہ ھو اللہ ھو
 

shehr-e-tanhayi

Super Magic Jori
Super Moderator
Jul 20, 2015
32,997
8,429
713
افلاک کی وسعت میں کیا راز نہاں ہیں
ڈالیں کمند ہم بھی کرتے ہیں جستجو


bahot khoob
 
Top