Us Ne Chuaa To Shaakh

  • Work-from-home

ROHAAN

TM Star
Aug 14, 2016
1,788
917
613
Grapes-Anti-Aging-Agents.jpg


آس نے چُھوا تو شاخِ

آس نے چُھوا تو شاخِ ثمر سی لچک گئی
بجلی کی ایک رَو سی بدن میں لپک گئی

قسمت سے وصلِ یار میسّر ہوا تھا شب
آپس کی چھیڑ چھاڑ میں چُنری مسک گئی

شرم و حیا سے میں تو سمٹتی گئی مگر
اس کشمکش میں جسم سے چادر سرک گئی

پلکیں جھکیں تو ابرِ سیاہ مست چھا گیا
اٹھّی نگاہِ ناز تو بجلی چمک گئی

وہ لمس تھا نسیمِ سحر کا کہ صبح دم
شاخِ گُلاب پر جو کلی تھی چٹک گئی

وعدہ تھا اُس کا آنے کا آیا نہ آج بھی
پلکیں جھپک جھپک کے مری آنکھ تھک گئی

کتنا لطیف ہوتا ہے احساس پیار کا
چھوٹی سی بات دل میں کسی کےکھٹک گئی


اُس کے بغیر زیست بھی دشوار ہے سحر
لگتا ہے جیسے سانس گلے میں اٹک گئی
 
Top