ہم چھوڑ چلے ہیں محفل کو

shehr-e-tanhayi

Super Magic Jori
Administrator
Jul 20, 2015
39,357
11,540
913

اذیتوں کے تمام نشتر میری رگوں میں اتار کر وہ
🥺۔🥺بڑی محبت سے پوچھتا ہے تمہاری آنکھوں کو کیا ہوا ہے
کیا ہوا ہے؟؟؟؟
 

Angela

♡~Loneliness Forever~♡
TM Star
Apr 29, 2019
4,589
1,931
263
♡~Dasht e Tanhayi~♡
اٹھیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اتنی جلدی کیوں سو رہی ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔
اس وقت ہمیں بھی نیند سی آ رہی۔۔شائد میڈیسن کی وجہ سے غنودگی۔۔۔۔۔
پر زرا سا بھی دل نہیں کر رہا۔۔۔چئیر پہ بیٹھے ہیں
 

shehr-e-tanhayi

Super Magic Jori
Administrator
Jul 20, 2015
39,357
11,540
913
اٹھیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اتنی جلدی کیوں سو رہی ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔
اس وقت ہمیں بھی نیند سی آ رہی۔۔شائد میڈیسن کی وجہ سے غنودگی۔۔۔۔۔
پر زرا سا بھی دل نہیں کر رہا۔۔۔چئیر پہ بیٹھے ہیں
سونا کہاں ابھی۔۔۔۔
کافی بڑا پروجیکٹ ہے کوکو موکو کا پنجرہ بنانا۔
ذرا دم لینے کو رُکے تھے
 

Angela

♡~Loneliness Forever~♡
TM Star
Apr 29, 2019
4,589
1,931
263
♡~Dasht e Tanhayi~♡
کرو جی کی گل کرنی
اُداسیاں بے سبب نہیں ہیں
اُداسیوں کا اگر یہ موسم
ٹهر گیا تو عذاب کرے گا،
نہ جی سکو گے نہ مر سکو گے
نہ کام ہی کوئی کر سکو گے
کسی کی ہر پل طلب کرے گا
اُداسیاں بے سبب نہیں ہیں
سنو جو لمحے ہیں آج حاصل،
انہیں ہمیشہ سنبهال رکهنا
وفا کے گلشن میں چاروں جانب
بہار رکهنا، نکهار رکهنا
محبت کا وقار لکهنا،
اُداسیاں بے سبب نہیں ہیں
جہاں میں کتنے ہی لوگ آئے
رہے بسے ہیں، اجڑ گئے ہیں
مگر یہ جذبے ابد سے ہیں،
اور ازل تک رہیں گے
تم اپنی آنکهوں میں، پہلے جیسا جال رکهنا
اُداسیاں بے سبب نہیں ہیں
زرا یہ سوچو بچهڑ گیے تو،
کہاں ملیں گے
یوں ہی رہیں گی تمام راہیں
مگر یہ راہی نہ مل سکیں گے
بہار میں بهی خزاں کی صورت
نہ پهول ہر سمت کهل سکیں گے
نہ دل کو اپنے اداس رکهنا،
ہر اک جذبے کا پاس رکهنا
ملیں گے آخر یہ آس رکهنا
اُداسیاں بے سبب نہیں ہیں
 

shehr-e-tanhayi

Super Magic Jori
Administrator
Jul 20, 2015
39,357
11,540
913
ہوں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
ہم آفلائن ہو رہے۔۔۔۔۔۔۔۔:)۔
سلامتی ہو۔۔۔۔۔۔۔۔۔
آپ پر بھی سلامتی ہو۔

آف لائن؟

پہلے موڈ آف تھا اور اب لائن بھی آف کرنے لگیں۔
😴😴😴😴 ہماری تو کلاس ہو رہی
 

shehr-e-tanhayi

Super Magic Jori
Administrator
Jul 20, 2015
39,357
11,540
913


اُداسیاں بے سبب نہیں ہیں
اُداسیوں کا اگر یہ موسم
ٹهر گیا تو عذاب کرے گا،
نہ جی سکو گے نہ مر سکو گے
نہ کام ہی کوئی کر سکو گے
کسی کی ہر پل طلب کرے گا
اُداسیاں بے سبب نہیں ہیں
سنو جو لمحے ہیں آج حاصل،
انہیں ہمیشہ سنبهال رکهنا
وفا کے گلشن میں چاروں جانب
بہار رکهنا، نکهار رکهنا
محبت کا وقار لکهنا،
اُداسیاں بے سبب نہیں ہیں
جہاں میں کتنے ہی لوگ آئے
رہے بسے ہیں، اجڑ گئے ہیں
مگر یہ جذبے ابد سے ہیں،
اور ازل تک رہیں گے
تم اپنی آنکهوں میں، پہلے جیسا جال رکهنا
اُداسیاں بے سبب نہیں ہیں
زرا یہ سوچو بچهڑ گیے تو،
کہاں ملیں گے
یوں ہی رہیں گی تمام راہیں
مگر یہ راہی نہ مل سکیں گے
بہار میں بهی خزاں کی صورت
نہ پهول ہر سمت کهل سکیں گے
نہ دل کو اپنے اداس رکهنا،
ہر اک جذبے کا پاس رکهنا
ملیں گے آخر یہ آس رکهنا
اُداسیاں بے سبب نہیں ہیں

تم مجھے چھوڑ کے جاؤ گے تو مر جاؤں گا
یوں کرو جانے سے پہلے مجھے پاگل کر دو


😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭 😭
 
Top